امریکی ڈالر کو بڑا دھچکا

کئی ہفتوں بعد امریکی ڈالر کو بڑا دھچکا،روپیہ جان پکڑنے لگا،،ایک دن میں ڈالرکی قدر میں 9 روپے 59 پیسے کی ہوشربا کمی ہوگئی،،سونے کی قیمتیں بھی گرگئیں،،سٹاک مارکیٹ میں تیزی رہی،،ہنڈرڈانڈیکس41 ہزار کی نفسیاتی حد عبور کرگیا،،اسٹیٹ بینک نے ایکسچینج کمپنیوں اورفارن ایکسچینج آپریشنزکی نگرانی سخت کردی۔

ملکی مالیاتی شعبےکی تاریخ میں پاکستانی روپےکی قدرمیں ریکارڈ اضافہ ہواہے،،انٹربینک میں ڈالر کی قیمت 9 روپے59 پیسے کم ہوکر 4 فیصد گری،، کاروبارکےاختتام پرڈالر کی قیمت 11 روپے15پیسے کمی کے ساتھ 228 روپے79 پیسے ہوگئی،،اوپن مارکیٹ میں ڈالر کی قیمت 11 روپےکم ہوکر230 روپے ہوگئی۔

معاشی ماہرین کا کہنا ہے کہ ڈالر کی قیمت میں کمی سے در آمدات سستی ہو جائیں گی،، مگر اس کا اثر عمومی قیمتوں پر نہیں پڑے گا۔

ڈالر سستا ہونے سےصرافہ مارکیٹ میں سونے کی قیمت میں بھی 8600روپے فی تولہ کی بڑی کمی ہوئی ،،سونا1لاکھ 45ہزار300روپے تولہ پر آگیا،،دس گرام سونےکا بھاؤ 7 ہزار 373 روپےکم ہوکر 1 لاکھ24 ہزار 571 روپے ہے۔

پاکستان سٹاک مارکیٹ میں  تیزی رہی۔انٹر بینک میں ڈالر کی قدر میں کمی کی وجہ سےسٹاک مارکیٹ میں ہنڈرڈانڈیکس نے 41ہزار کی حد بحال کر لی ،، ہنڈرڈ انڈیکس 933 پوائنٹس اضافے کے بعد 41ہزار124پوائنٹس پر پہنچ گیا۔

ادھر اسٹیٹ بینک نے ایکسچینج کمپنیوں اور بینکوں کےفارن ایکسچینج آپریشنزکی نگرانی سخت کردی ہے، اسٹیٹ بینک کی جانب سے جاری بیان میں کہاگیا ہے،،متعدد ایکسچینج کمپنیوں اور بینکوں کےمعائنےشروع کردیئے،، ضوابط کی خلاف ورزی پر 2 ایکسچینج کمپنیزکی 4 برانچوں کےآپریشنزمعطل کئے گئے ہیں۔

ڈالر کی قیمت میں ریکارڈ کمی سے ملک کے معاشی اعشاریے مثبت سمت گامزن دکھائی دیتے ہیں،،روپے کی مضبوطی کا یہ تسلسل قائم رہے گا یا نہیں ،،اس کا اندازہ آنے والے دنوں میں ملکی زرمبادلہ کے ذخائر کی صورتحال سے لگایاجاسکے گا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں